رواة الحدیث

نتائج
نتیجہ مطلوبہ تلاش لفظ / الفاظ: بسر سعيد الحضرمي 1848
کتاب/کتب میں: سنن ابي داود
12 رزلٹ جن میں تمام الفاظ آئے ہیں۔
رواۃ الحدیث: ابو طلحة الانصاري ( 3142 ) ، زيد بن خالد الجهني ( 3137 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، بكير بن عبد الله القرشي ( 1951 ) ، الليث بن سعد الفهمي ( 6641 ) ، قتيبة بن سعيد الثقفي ( 6460 ) ، حدیث ۔۔۔ زید بن خالد ؓ ابوطلحہ ؓ سے روایت کرتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” فرشتے اس گھر میں نہیں جاتے ہیں جس میں تصویر ہو “ ۔ بسر جو حدیث کے راوی ہیں کہتے ہیں : پھر زید بن خالد بیمار ہوئے تو ہم ان کی عیادت کرنے کے لیے گئے تو کیا دیکھتے ہیں کہ ان کے دروازے پر ایک پردہ لٹک رہا ہے جس میں تصویر ہے تو میں نے ام المؤمنین میمونہ کے ربیب (پروردہ) عبیداللہ خولانی سے کہا : کیا زید نے ہمیں تصویر کی ممانعت کے سلسلہ میں اس سے پہلے حدیث نہیں سنائی تھی (پھر یہ کیا ہوا ؟ ) تو عبیداللہ نے کہا : کیا آپ نے ان سے نہیں سنا تھا انہوں نے یہ بھی تو کہا تھا ” سوائے اس نقش و نگار کے جو کپڑے پر ہو “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 396  -  3k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن قيس الاشعري ( 5021 ) ، ابو سعيد الخدري ( 3260 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، يزيد بن خصيفة الكندي ( 8454 ) ، سفيان بن عيينة الهلالي ( 3443 ) ، احمد بن عبدة الضبي ( 469 ) ، حدیث ۔۔۔ ابو سعید خدری ؓ کہتے ہیں کہ میں انصار کی مجالس میں سے ایک مجلس میں بیٹھا ہوا تھا اتنے میں ابوموسیٰ ؓ گھبرائے ہوئے آئے ، تو ہم نے ان سے کہا : کس چیز نے آپ کو گھبراہٹ میں ڈال دیا ہے ؟ انہوں نے کہا : مجھے عمر ؓ نے بلا بھیجا تھا ، میں ان کے پاس آیا ، اور تین بار ان سے اندر آنے کی اجازت طلب کی ، مگر مجھے اجازت نہ ملی تو میں لوٹ گیا (دوبارہ ملاقات پر) انہوں نے کہا : تم میرے پاس کیوں نہیں آئے ؟ میں نے کہا : میں تو آپ کے پاس گیا تھا ، تین بار اجازت مانگی ، پھر مجھے اجازت نہ دی گئی ، رسول اللہ ﷺ نے فرمایا ہے کہ جب تم میں سے کوئی تین بار اندر آنے کی اجازت مانگے اور اسے اجازت نہ ملے تو وہ لوٹ جائے (یہ سن کر) عمر ؓ نے کہا : تم اس بات کے لیے گواہ پیش کرو ، اس پر ابوسعید نے کہا : (اس کی گواہی کے لیے تو) تمہارے ساتھ قوم کا ایک معمولی شخص ہی جا سکتا ہے ، پھر ابوسعید ہی اٹھ کر ابوموسیٰ کے ساتھ گئے اور گواہی دی ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  4k
رواۃ الحدیث: الحارث بن الصمة الانصاري ( 4685 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، سالم بن ابي امية القرشي ( 3181 ) ، مالك بن انس الاصبحي ( 6659 ) ، عبد الله بن مسلمة الحارثي ( 5085 ) ، حدیث ۔۔۔ بسر بن سعید کہتے ہیں کہ زید بن خالد جہنی ؓ نے انہیں ابوجہیم ؓ کے پاس یہ پوچھنے کے لیے بھیجا کہ انہوں نے رسول اللہ ﷺ سے نمازی کے آگے سے گزرنے والے کے بارے میں کیا سنا ہے ؟ تو ابوجہیم ؓ نے کہا : رسول اللہ ﷺ نے فرمایا ہے : ” اگر نمازی کے سامنے سے گزرنے والا یہ جان لے کہ اس پر کس قدر گناہ ہے ، تو اس کو نمازی کے سامنے گزرنے سے چالیس (دن یا مہینے یا سال تک) وہیں کھڑا رہنا بہتر لگتا “ ۔ ابونضر کہتے ہیں : مجھے معلوم نہیں کہ انہوں نے چالیس دن کہا یا چالیس مہینے یا چالیس سال ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  3k
رواۃ الحدیث: زيد بن خالد الجهني ( 3137 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، ابو سلمة بن عبد الرحمن الزهري ( 4903 ) ، يحيى بن ابي كثير الطائي ( 8208 ) ، الحسين بن ذكوان المعلم ( 1327 ) ، عبد الوارث بن سعيد العنبري ( 5270 ) ، عبد الله بن عمر التميمي ( 4978 ) ، حدیث ۔۔۔ زید بن خالد جہنی ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جس نے اللہ کے راستے میں جہاد کرنے والے کے لیے سامان جہاد فراہم کیا اس نے جہاد کیا اور جس نے مجاہد کے اہل و عیال کی اچھی طرح خبرگیری کی اس نے جہاد کیا “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: زيد بن ثابت الانصاري ( 3131 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، سالم بن ابي امية القرشي ( 3181 ) ، عبد الله بن سعيد الفزاري ( 4834 ) ، مكي بن إبراهيم الحنظلي ( 7660 ) ، هارون بن عبد الله البزاز ( 7983 ) ، حدیث ۔۔۔ زید بن ثابت ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے مسجد کے ایک حصہ کو چٹائی سے گھیر کر ایک حجرہ بنا لیا ، آپ رات کو نکلتے اور اس میں نماز پڑھتے تھے ، کچھ لوگوں نے بھی آپ کے ساتھ نماز پڑھنی شروع کر دی وہ ہر رات آپ کے پاس آنے لگے یہاں تک کہ ایک رات آپ ﷺ ان کی طرف نہیں نکلے ، لوگ کھنکھارنے اور آوازیں بلند کرنے لگے ، اور آپ کے دروازے پر کنکر مارنے لگے ، تو رسول اللہ ﷺ غصے میں ان کی طرف نکلے اور فرمایا : ” لوگو ! تم مسلسل ایسا کئے جا رہے تھے یہاں تک کہ مجھے گمان ہوا کہ کہیں تم پر یہ فرض نہ کر دی جائے ، لہٰذا اب تم کو چاہیئے کہ گھروں میں نماز پڑھا کرو اس لیے کہ آدمی کی سب سے بہتر نماز وہ ہے جسے وہ اپنے گھر میں پڑھے سوائے فرض نماز کے “ ۔ ... حدیث متعلقہ ابواب: گھر میں مرد کا نفل نماز پڑھنا ۔
Terms matched: 4  -  Score: 340  -  4k
رواۃ الحدیث: ابو هريرة الدوسي ( 4396 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، يزيد بن خصيفة الكندي ( 8454 ) ، عبد الله بن ابي فروة القرشي ( 5059 ) ، سعيد بن منصور الخراساني ( 3401 ) ، عبد الله بن محمد القضاعي ( 5064 ) ، حدیث ۔۔۔ ابوہریرہ ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جس عورت نے خوشبو کی دھونی لے رکھی ہو تو وہ ہمارے ساتھ عشاء کے لیے (مسجد میں) نہ آئے “ (بلکہ وہ گھر ہی میں پڑھ لے) ۔ ابن نفیل کی روایت میں « العشاء » کے بجائے « عشاء الآخرۃ » ہے (یعنی عشاء کی صلاۃ) ۔
Terms matched: 4  -  Score: 340  -  2k
رواۃ الحدیث: زيد بن خالد الجهني ( 3137 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، سالم بن ابي امية القرشي ( 3181 ) ، الضحاك بن عثمان الحزامي ( 1490 ) ، محمد بن ابي فديك الديلي ( 6822 ) ، هارون بن عبد الله البزاز ( 7983 ) ، محمد بن رافع القشيري ( 6964 ) ، حدیث ۔۔۔ زید بن خالد جہنی ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ سے لقطہٰ کے بارے میں پوچھا گیا تو آپ نے فرمایا : ” تم ایک سال تک اس کی تشہیر کرو ، اگر اس کا ڈھونڈنے والا آ جائے تو اسے اس کے حوالہ کر دو ورنہ اس کی تھیلی اور سر بندھن کی پہچان رکھو اور پھر اسے کھا جاؤ ، اب اگر اس کا ڈھونڈھنے والا آ جائے تو اسے (اس کی قیمت) ادا کر دو “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
رواۃ الحدیث: ابو هريرة الدوسي ( 4396 ) ، ابو سلمة بن عبد الرحمن الزهري ( 4903 ) ، ابو بكر بن عمرو الانصاري ( 133 ) ، عمرو بن العاص القرشي ( 6086 ) ، عبد الرحمن بن ثابت المصري ( 4328 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، محمد بن إبراهيم القرشي ( 6796 ) ، يزيد بن الهاد الليثي ( 8452 ) ، عبد العزيز بن محمد الدراوردي ( 4591 ) ، عبيد الله بن عمر الجشمي ( 5422 ) ، حدیث ۔۔۔ عمرو بن العاص ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جب حاکم (قاضی) خوب سوچ سمجھ کر فیصلہ کرے اور درستگی کو پہنچ جائے تو اس کے لیے دوگنا اجر ہے ، اور جب قاضی سوچ سمجھ کر فیصلہ کرے اور خطا کر جائے تو بھی اس کے لیے ایک اجر ہے “ ۔ راوی کہتے ہیں : میں نے اس حدیث کو ابوبکر بن حزم سے بیان کیا تو انہوں نے کہا : مجھ سے اسی طرح ابوسلمہ نے ابوہریرہ ؓ کے واسطہ سے بیان کیا ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  3k
رواۃ الحدیث: عمر بن الخطاب العدوي ( 5913 ) ، عبد الله بن قدامة السعدي ( 4707 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، بكير بن عبد الله القرشي ( 1951 ) ، الليث بن سعد الفهمي ( 6641 ) ، هشام بن عبد الملك الباهلي ( 8053 ) ، حدیث ۔۔۔ ابن الساعدی (عبداللہ بن عمرو السعدی القرشی العامری) ؓ کہتے ہیں کہ عمر ؓ نے مجھے صدقہ (وصولی) پر عامل مقرر کیا جب میں اس کام سے فارغ ہوا تو عمر ؓ نے میرے کام کی اجرت دینے کا حکم دیا ، میں نے کہا : میں نے یہ کام اللہ کے لیے کیا ہے ، انہوں نے کہا : جو تمہیں دیا جائے اسے لے لو ، میں نے بھی رسول اللہ ﷺ کے زمانہ میں (زکاۃ کی وصولی کا) کام کیا تھا تو آپ نے مجھے اجرت دی ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  3k
رواۃ الحدیث: زيد بن ثابت الانصاري ( 3131 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، سالم بن ابي امية القرشي ( 3181 ) ، إبراهيم بن ابي النضر ( 821 ) ، سليمان بن بلال القرشي ( 3574 ) ، عبد الله بن وهب القرشي ( 5147 ) ، احمد بن صالح المصري ( 452 ) ، حدیث ۔۔۔ زید بن ثابت ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” آدمی کی نماز اس کے اپنے گھر میں اس کی میری اس مسجد میں نماز سے افضل ہے سوائے فرض نماز کے “ ۔ ... حدیث متعلقہ ابواب: گھر میں مرد کا نفل نماز پڑھنا ۔
Terms matched: 4  -  Score: 288  -  2k
رواۃ الحدیث: عمر بن الخطاب العدوي ( 5913 ) ، عبد الله بن الساعدي العامري ( 21559 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، بكير بن عبد الله القرشي ( 1951 ) ، الليث بن سعد الفهمي ( 6641 ) ، هشام بن عبد الملك الباهلي ( 8053 ) ، حدیث ۔۔۔ ابن ساعدی کہتے ہیں کہ عمر ؓ نے مجھے صدقے پر عامل مقرر کیا تو جب میں اس کام سے فارغ ہوا اور اسے ان کے حوالے کر دیا تو انہوں نے میرے لیے محنتانے (اجرت) کا حکم دیا ، میں نے عرض کیا : میں نے یہ کام اللہ کے لیے کیا اور میرا بدلہ اللہ کے ذمہ ہے ، عمر ؓ نے کہا : جو تمہیں دیا جا رہا ہے اسے لے لو ، میں نے بھی یہ کام رسول اللہ ﷺ کے زمانے میں کیا تھا ، آپ ﷺ نے مجھے دینا چاہا تو میں نے بھی وہی بات کہی جو تم نے کہی ، اس پر رسول اللہ ﷺ نے مجھ سے فرمایا : ” جب تمہیں کوئی چیز بغیر مانگے ملے تو اس میں سے کھاؤ اور صدقہ کرو “ ۔ ... حدیث متعلقہ ابواب: عاملین زکاۃ زکاۃ وصول کرنے والے لوگ زکاۃ سے معاوضہ لے سکتے ہیں خواہ غنی ہی ہوں ۔
Terms matched: 4  -  Score: 288  -  3k
رواۃ الحدیث: سعد بن ابي وقاص الزهري ( 3232 ) ، الحسين بن عبد الرحمن الاشجعي ( 1332 ) ، بسر بن سعيد الحضرمي ( 1848 ) ، بكير بن عبد الله القرشي ( 1951 ) ، عياش بن عباس القتباني ( 6275 ) ، المفضل بن فضالة القتباني ( 1681 ) ، يزيد بن خالد الهمداني ( 8411 ) ، حدیث ۔۔۔ سعد بن ابی وقاص ؓ اس حدیث میں کہتے ہیں میں نے عرض کیا : اللہ کے رسول ! (اس فتنہ و فساد کے زمانہ میں) اگر کوئی میرے گھر میں گھس آئے ، اور اپنا ہاتھ مجھے قتل کرنے کے لیے بڑھائے تو میں کیا کروں ؟ تو رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” تم آدم کے نیک بیٹے (ہابیل) کی طرح ہو جاؤ “ ، پھر یزید نے یہ آیت پڑھی « لئن بسطت إلى يدك » ۔ ... حدیث متعلقہ ابواب: شان نزول و تفسیر آیات ۔
Terms matched: 4  -  Score: 288  -  3k


Search took 0.591 seconds