رواة الحدیث

نتائج
نتیجہ مطلوبہ تلاش لفظ / الفاظ: بشر عمر الزهراني 1885
کتاب/کتب میں: صحیح مسلم
5 رزلٹ جن میں تمام الفاظ آئے ہیں۔
رواۃ الحدیث: عبد الله بن عمر العدوي ( 4967 ) ، اسلم العدوي ( 549 ) ، زيد بن اسلم القرشي ( 3122 ) ، هشام بن سعد القرشي ( 8047 ) ، بشر بن عمر الزهراني ( 1885 ) ، محمد بن عمرو العتكي ( 7222 ) ، عبد الرحمن بن مهدي العنبري ( 4493 ) ، عمرو بن علي الفلاس ( 6171 ) ، حدیث ۔۔۔ ترجمہ وہی ہے جو اوپر گزرا ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  1k
رواۃ الحدیث: ثور بن زيد الديلي ( 2057 ) ، سليمان بن بلال القرشي ( 3574 ) ، بشر بن عمر الزهراني ( 1885 ) ، محمد بن مرزوق الباهلي ( 7261 ) ، حدیث ۔۔۔ ثور بن یزید دیلمی سے اسی سند کے ساتھ اسی طرح مروی ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  1k
رواۃ الحدیث: اسم مبهم ( 1131 ) ، سهل بن ابي حثمة الانصاري ( 3665 ) ، ابو ليلى بن عبد الله الانصاري ( 321 ) ، مالك بن انس الاصبحي ( 6659 ) ، بشر بن عمر الزهراني ( 1885 ) ، إسحاق بن منصور الكوسج ( 970 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا سہل بن ابی حثمہ ؓ کو خبر دی اس کی قوم کے بڑے لوگوں نے کہ عبداللہ بن سہل اور محیصہ ؓ دونوں خیبر کی طرف گئے تکلیف کی وجہ سے جو ان پر آئی تو محیصہ سے کسی نے کہا : عبداللہ بن سہل مارے گئے اور ان کی نعش چشمہ یا کنواں میں پھینک دی ہے ۔ وہ یہود کے پاس آئے اور انہوں نے کہا : قسم اللہ کی تم نے اس کو مارا ہے ۔ یہودیوں نے کہا : قسم اللہ کی ہم نے اس کو نہیں مارا ۔ پھر وہ اپنی قوم کے پاس آئے اور ان سے بیان کیا ، پھر سیدنا محیصہ ؓ اور ان کا بھائی حویصہ ؓ جو اس سے بڑا تھا اور عبدالرحمٰن بن سہل ؓ تینوں آئے رسول اللہ ﷺ کے پاس ، محیصہ ؓ نے بات کرنا چاہیی وہی خیبر کو گیا تھا عبداللہ ؓ کے ساتھ تو رسول اللہ ﷺ نے فرمایا محیصہ ؓ سے ”بڑے کی بڑائی کر اور بڑے کو کہنے دے ۔ “ پھر حویصہ ؓ نے بات کی بعد اس کے محیصہ ؓ سے رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ”تو یہود تمہارے ساتھی کی دیت دیں یا جنگ کریں ۔ “ پھر آپ ﷺ نے یہود کو لکھا اس بارے میں ۔ انہوں نے جواب میں لکھا ، قسم اللہ کی ! ہم نے نہیں مارا اس کو تب رسول اللہ ﷺ نے حویصہ محیصہ اور عبدالرحمٰن ؓ سے فرمایا : ”تم قسم کھاتے ہو اور اپنے ساتھی کا خون لیتے ہو ۔ “ انہوں نے کہا : نہیں ، آپ ﷺ نے فرمایا : ”تو یہود قسم کھائیں گے تمہارے لیے ۔ “ انہوں نے کہا : وہ مسلمان نہیں ہیں ان کی قسم کیا کیا اعتبار ، پھر رسول اللہ ﷺ نے اس کی دیت اپنے پاس سے دی اور سو اونٹ ان کے پاس بھیجے یہاں تک کہ ان کے گھر میں گئے ۔ سیدنا سہل ؓ نے کہا : ان میں سے ایک سرخ اونٹنی نے مجھے لات ماری ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  6k
رواۃ الحدیث: قتادة بن دعامة السدوسي ( 6458 ) ، سعيد بن ابي عروبة العدوي ( 3281 ) ، علي بن مسهر القرشي ( 5816 ) ، ابن ابي شيبة العبسي ( 5049 ) ، شعبة بن الحجاج العتكي ( 3795 ) ، بشر بن عمر الزهراني ( 1885 ) ، محمد بن يحيى بن ابي حزم ( 7315 ) ، يحيى بن سعيد القطان ( 8271 ) ، زهير بن حرب الحرشي ( 3036 ) ، حدیث ۔۔۔ مذکورہ بالا حدیث ایک اور سند سے بھی اسی طرح آئی ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
رواۃ الحدیث: يحيى بن سعيد الانصاري ( 8272 ) ، سليمان بن بلال القرشي ( 3574 ) ، بشر بن عمر الزهراني ( 1885 ) ، إسحاق بن راهويه المروزي ( 927 ) ، حدیث ۔۔۔ یحییٰ سے بھی یہی روایت مذکور ہوئی اس سند سے مگر اس میں یہ ہے کہ یہ تاخیر قضائے رمضان کی شعبان تک رسول اللہ ﷺ کی خدمت کے سبب سے ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 288  -  2k


Search took 0.424 seconds