رواة الحدیث

نتائج
نتیجہ مطلوبہ تلاش لفظ / الفاظ: بقية الوليد الكلاعي 1919
کتاب/کتب میں: سنن ابي داود
45 رزلٹ جن میں تمام الفاظ آئے ہیں۔
رواۃ الحدیث: بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، يحيى بن عثمان القرشي ( 8312 ) ، انس بن مالك الانصاري ( 720 ) ، عبد الرحمن بن جبير الحضرمي ( 4335 ) ، راشد بن سعد المقرائي ( 2854 ) ، صفوان بن عمرو السكسكي ( 3942 ) ، عبد القدوس بن الحجاج الخولاني ( 4602 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، محمد بن المصفى القرشي ( 7277 ) ، حدیث ۔۔۔ انس بن مالک ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جب مجھے معراج کرائی گئی ، تو میرا گزر ایسے لوگوں پر سے ہوا ، جن کے ناخن تانبے کے تھے اور وہ ان سے اپنے منہ اور سینے نوچ رہے تھے ، میں نے پوچھا : جبرائیل ! یہ کون لوگ ہیں ؟ کہا : یہ وہ ہیں جو لوگوں کا گوشت کھاتے (غیبت کرتے) اور ان کی بے عزتی کرتے تھے “ ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : ہم سے اسے یحییٰ بن عثمان نے بیان کیا ہے اور بقیہ سے روایت کر رہے تھے ، اس میں انس موجود نہیں ہیں ۔
Terms matched: 4  -  Score: 500  -  3k
رواۃ الحدیث: خالد بن الوليد المخزومي ( 2630 ) ، المقدام بن معدي كرب الكندي ( 1686 ) ، يحيى بن المقدام الكندي ( 8232 ) ، صالح بن يحيى الكندي ( 3899 ) ، ثور بن يزيد الرحبي ( 2058 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، سعيد بن شبيب الحضرمي ( 3346 ) ، حدیث ۔۔۔ خالد بن الولید ؓ کہتے ہیں رسول اللہ ﷺ نے گھوڑے ، خچر اور گدھوں کے گوشت کھانے سے منع کیا ہے ۔ حیوۃ نے ہر دانت سے پھاڑ کر کھانے والے درندے کا اضافہ کیا ہے ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : یہ مالک کا قول ہے ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : گھوڑے کے گوشت میں کوئی مضائقہ نہیں اور اس حدیث پر عمل نہیں ہے ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : یہ حدیث منسوخ ہے ، خود صحابہ کی ایک جماعت نے گھوڑے کا گوشت کھایا جس میں عبداللہ بن زبیر ، فضالہ بن عبید ، انس بن مالک ، اسماء بنت ابوبکر ، سوید بن غفلہ ، علقمہ شامل ہیں اور قریش عہد نبوی میں گھوڑے ذبح کرتے تھے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 356  -  3k
رواۃ الحدیث: عائشة بنت ابي بكر الصديق ( 4049 ) ، خيار بن سلمة الشامي ( 2757 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، إبراهيم بن موسى التميمي ( 890 ) ، حدیث ۔۔۔ ابوزیاد خیار بن سلمہ سے روایت ہے کہ انہوں نے ام المؤمنین عائشہ ؓ سے پیاز کے متعلق پوچھا کیا تو آپ نے کہا : رسول اللہ ﷺ نے جو آخری کھانا تناول کیا اس میں پیاز تھی ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: اسم مبهم ( 1131 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، حدیث ۔۔۔ ایک صحابی رسول ؓ کا ارشاد ہے کہ نبی اکرم ﷺ نے ایک شخص کو نماز پڑھتے دیکھا ، اس کے پاؤں کے اوپری حصہ میں ایک درہم کے برابر حصہ خشک رہ گیا تھا ، وہاں پانی نہیں پہنچا تھا ، تو نبی اکرم ﷺ نے اسے وضو ، اور نماز دونوں کے لوٹانے کا حکم دیا ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: عوف بن مالك الاشجعي ( 6259 ) ، سيف الشامي ( 3732 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، موسى بن مروان التمار ( 7769 ) ، عبد الوهاب بن نجدة الحوطي ( 5282 ) ، حدیث ۔۔۔ عوف بن مالک ؓ کہتے ہیں نبی اکرم ﷺ نے دو شخصوں کے درمیان فیصلہ کیا ، تو جس کے خلاف فیصلہ دیا گیا واپس ہوتے ہوئے کہنے لگا : مجھے بس اللہ کافی ہے اور وہ بہتر کار ساز ہے ، اس پر نبی اکرم ﷺ نے فرمایا : ” اللہ تعالیٰ بیوقوفی پر ملامت کرتا ہے لہٰذا زیر کی و دانائی کو لازم پکڑو ، پھر جب تم مغلوب ہو جاؤ تو کہو : میرے لیے بس اللہ کافی ہے اور وہ بہترین کار ساز ہے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  3k
رواۃ الحدیث: ابو ثعلبة الخشني ( 2113 ) ، ابو إدريس الخولاني ( 4046 ) ، يونس بن سيف العنسي ( 8611 ) ، محمد بن الوليد الزبيدي ( 6875 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، محمد بن المصفى القرشي ( 7277 ) ، محمد بن حرب الخولاني ( 6916 ) ، محمد بن المصفى القرشي ( 7277 ) ، حدیث ۔۔۔ ابوثعلبہ خشنی ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے مجھ سے عرض کیا : ” ابوثعلبہ ! جس جانور کو تم اپنے تیر و کمان سے یا اپنے کتے سے مارو اسے کھاؤ “ ۔ ابن حرب کی روایت میں اتنا اضافہ ہے کہ : ” وہ کتا سدھایا ہوا (شکاری) ہو ، اور اپنے ہاتھ سے (یعنی تیر سے) شکار کیا ہوا جانور ہو تو کھاؤ خواہ اس کو ذبح کر سکو یا نہ کر سکو “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: ابو هريرة الدوسي ( 4396 ) ، طارق بن مخاشن الاسلمي ( 3999 ) ، محمد بن شهاب الزهري ( 7272 ) ، محمد بن الوليد الزبيدي ( 6875 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، حدیث ۔۔۔ ابوہریرہ ؓ کہتے ہیں کہ نبی اکرم ﷺ کے پاس ایک شخص لایا گیا جسے بچھو نے کاٹ لیا تھا تو آپ نے فرمایا : ” اگر وہ یہ دعا پڑھ لیتا : « أعوذ بكلمات اللہ التامۃ من شر ما خلق » ” میں اللہ کے کامل کلمات کی پناہ چاہتا ہوں اس کی تمام مخلوقات کی برائی سے “ تو وہ نہ کاٹتا یا اسے نقصان نہ پہنچاتا “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: انس بن مالك الانصاري ( 720 ) ، محمد بن شهاب الزهري ( 7272 ) ، محمد بن الوليد الزبيدي ( 6875 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، كثير بن عبيد المذحجي ( 6567 ) ، عمرو بن عثمان القرشي ( 6163 ) ، حدیث ۔۔۔ انس بن مالک ؓ کا بیان ہے کہ انہوں نے رسول اللہ ﷺ کی بیٹی ام کلثوم ؓ کو ریشمی دھاری دار چادر پہنے دیکھا ۔ راوی کہتے ہیں : « سیراء » کے معنی ریشمی دھاری دار کپڑے کے ہیں ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: عبادة بن الصامت الانصاري ( 4153 ) ، جنادة بن ابي امية الازدي ( 2182 ) ، عمير بن الاسود العنسي ( 6076 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، حدیث ۔۔۔ عبادہ بن صامت ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” میں دجال کے متعلق تمہیں اتنی باتیں بتا چکا ہوں کہ مجھے اندیشہ ہوا کہ تم اسے یاد نہ رکھ سکو گے (تو یاد رکھو) مسیح دجال پستہ قد ہو گا ، چلنے میں اس کے دونوں پاؤں کے بیچ فاصلہ رہے گا ، اس کے بال گھونگھریالے ہوں گے ، کانا ہو گا ، آنکھ مٹی ہوئی ہو گی ، نہ ابھری ہوئی اور نہ اندر گھسی ہوئی ، پھر اس پر بھی اگر تمہیں اشتباہ ہو جائے تو یاد رکھو تمہارا رب کانا نہیں ہے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  3k
رواۃ الحدیث: العرباض بن سارية السلمي ( 5583 ) ، عبد الله بن ابي بلال الخزاعي ( 4633 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، مؤمل بن الفضل الجزري ( 6651 ) ، حدیث ۔۔۔ عرباض بن ساریہ ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ سونے سے پہلے « المسبحات » پڑھتے تھے ، اور فرماتے تھے : ” ان میں ایک آیت ایسی ہے جو ہزار آیتوں سے افضل ہے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن بسر النصري ( 4742 ) ، عبد الله بن ابي بلال الخزاعي ( 4633 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، حدیث ۔۔۔ عبداللہ بن بسر ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” بڑی جنگ اور فتح قسطنطنیہ کے درمیان چھ سال کی مدت ہو گی اور ساتویں سال میں مسیح دجال کا ظہور ہو گا “ ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : یہ عیسیٰ کی روایت سے زیادہ صحیح ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: معاوية بن ابي سفيان الاموي ( 7570 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عمرو بن عثمان القرشي ( 6163 ) ، حدیث ۔۔۔ خالد کہتے ہیں مقدام بن معدی کرب ، عمرو بن اسود اور بنی اسد کے قنسرین کے رہنے والے ایک شخص معاویہ بن ابی سفیان ؓ کے پاس آئے ، تو معاویہ ؓ نے مقدام سے کہا : کیا آپ کو خبر ہے کہ حسن بن علی ؓ کا انتقال ہو گیا ؟ مقدام نے یہ سن کر « انا للہ وانا اليہ راجعون » پڑھا تو ان سے ایک شخص نے کہا : کیا آپ اسے کوئی مصیبت سمجھتے ہیں ؟ تو انہوں نے کہا : میں اسے مصیبت کیوں نہ سمجھوں کہ رسول اللہ ﷺ نے انہیں اپنی گود میں بٹھایا ، اور فرمایا : ” یہ میرے مشابہ ہے ، اور حسین علی کے “ ۔ یہ سن کر اسدی نے کہا : ایک انگارہ تھا جسے اللہ نے بجھا دیا تو مقدام نے کہا : آج میں آپ کو ناپسندیدہ بات سنائے ، اور ناراض کئے بغیر نہیں رہ سکتا ، پھر انہوں نے کہا : معاویہ ! اگر میں سچ کہوں تو میری تصدیق کریں ، اور اگر میں جھوٹ کہوں تو جھٹلا دیں ، معاویہ بولے : میں ایسا ہی کروں گا ۔ مقدام نے کہا : میں اللہ کا واسطہ دے کر آپ سے پوچھتا ہوں : کیا آپ کو معلوم ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے سونا پہننے سے منع فرمایا ہے ؟ معاویہ نے کہا : ہاں ۔ پھر کہا : میں اللہ کا واسطہ دے کر آپ سے پوچھتا ہوں : کیا آپ کو معلوم ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ریشمی کپڑا پہننے سے منع فرمایا ہے ؟ کہا : ہاں معلوم ہے ، پھر کہا : میں اللہ کا واسطہ دے کر آپ سے پوچھتا ہوں : کیا آپ کو معلوم ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے درندوں کی کھال پہننے اور اس پر سوار ہونے سے منع فرمایا ہے ؟ کہا : ہاں معلوم ہے ۔ تو انہوں نے کہا : معاویہ ! قسم اللہ کی میں یہ ساری چیزیں آپ کے گھر میں دیکھ رہا ہوں ؟ تو معاویہ نے کہا : مقدام ! مجھے معلوم تھا کہ میں تمہاری نکتہ چینیوں سے بچ نہ سکوں گا ۔ خالد کہتے ہیں : پھر معاویہ نے مقدام کو اتنا مال دینے کا حکم دیا جتنا ان کے اور دونوں ساتھیوں کو نہیں دیا تھا اور ان کے بیٹے کا حصہ دو سو والوں میں مقرر کیا ، مقدام نے وہ سارا مال اپنے ساتھیوں میں بانٹ دیا ، اسدی نے اپنے مال میں سے کسی کو کچھ نہ دیا ، یہ خبر معاویہ کو پہنچی تو انہوں نے کہا : مقدام سخی آدمی ہیں جو اپنا ہاتھ کھلا رکھتے ہیں ، اور اسدی اپنی چیزیں اچھی طرح روکنے والے آدمی ہیں ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  7k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن عمر العدوي ( 4967 ) ، الزبير بن الوليد الشامي ( 1429 ) ، شريح بن عبيد الحضرمي ( 3785 ) ، صفوان بن عمرو السكسكي ( 3942 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عمرو بن عثمان القرشي ( 6163 ) ، حدیث ۔۔۔ عبداللہ بن عمر ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ جب سفر کرتے اور رات ہو جاتی تو فرماتے : « يا أرض ربي وربك اللہ أعوذ باللہ من شرك وشر ما فيك وشر ما خلق فيك ومن شر ما يدب عليك وأعوذ باللہ من أسد وأسود ومن الحيۃ والعقرب ومن ساكن البلد ومن والد وما ولد » ” اے زمین ! میرا اور تیرا رب اللہ ہے ، میں اللہ کی پناہ چاہتا ہوں تیرے شر سے اور اس چیز کے شر سے جو تجھ میں ہے اور اس چیز کے شر سے جو تجھ میں پیدا کی گئی ہے اور اس چیز کے شر سے جو تجھ پر چلتی ہے اور اللہ کی پناہ چاہتا ہوں شیر اور کالے ناگ سے اور سانپ اور بچھو سے اور زمین پر رہنے والے (انسانوں اور جنوں) کے شر سے اور جننے والے کے شر اور جس چیز کو جسے اس نے جنا ہے اس کے شر سے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  3k
رواۃ الحدیث: عمرو بن عبسة السلمي ( 6158 ) ، شرحبيل بن السمط الكندي ( 3774 ) ، سليم بن عامر الكلاعي ( 3546 ) ، صفوان بن عمرو السكسكي ( 3942 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عبد الوهاب بن نجدة الحوطي ( 5282 ) ، حدیث ۔۔۔ شرحبیل بن سمط کہتے ہیں کہ انہوں نے عمرو بن عبسہ ؓ سے کہا : آپ ہم سے کوئی ایسی حدیث بیان کیجئے جسے آپ نے (براہ راست) رسول اللہ ﷺ سے سنی ہو تو انہوں نے کہا : میں نے رسول اللہ ﷺ کو فرماتے ہوئے سنا : ” جس نے کسی مسلمان گردن کو آزاد کیا تو وہ دوزخ سے اس کا فدیہ ہو گا “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: نافع مولى ابن عمر ( 7863 ) ، محمد بن الوليد الزبيدي ( 6875 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، محمد بن المصفى القرشي ( 7277 ) ، حدیث ۔۔۔ اس سند سے بھی نافع سے ایوب کی روایت جیسی حدیث مروی ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  1k
رواۃ الحدیث: معاذ بن جبل الانصاري ( 7547 ) ، عبد الله بن قيس الكندي ( 5019 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، حدیث ۔۔۔ معاذ بن جبل ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جہاد دو طرح کے ہیں : رہا وہ شخص جس نے اللہ کی رضا مندی چاہی ، امام کی اطاعت کی ، اچھے سے اچھا مال خرچ کیا ، ساتھی کے ساتھ نرمی اور محبت کی ، اور جھگڑے فساد سے دور رہا تو اس کا سونا اور اس کا جاگنا سب باعث اجر ہے ، اور جس نے اپنی بڑائی کے اظہار ، دکھاوے اور شہرت طلبی کے لیے جہاد کیا ، امام کی نافرمانی کی ، اور زمین میں فساد مچایا تو (اسے ثواب کیا ملنا) وہ تو برابر برابر بھی نہیں لوٹا “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  3k
رواۃ الحدیث: ابو هريرة الدوسي ( 4396 ) ، كيسان المقبري ( 6624 ) ، سعيد بن ابي سعيد المقبري ( 3280 ) ، محمد بن الوليد الزبيدي ( 6875 ) ، عبد الرحمن بن عمرو الاوزاعي ( 4457 ) ، شعيب بن إسحاق القرشي ( 3803 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عبد الوهاب بن نجدة الحوطي ( 5282 ) ، حدیث ۔۔۔ ابوہریرہ ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جب تم میں سے کوئی نماز پڑھے اور اپنے جوتے اتارے تو ان کے ذریعہ کسی کو تکلیف نہ دے ، چاہیئے کہ انہیں اپنے دونوں پاؤں کے بیچ میں رکھ لے یا انہیں پہن کر نماز پڑھے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  2k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن حوالة الازدي ( 4784 ) ، مرثد بن وداعة الجعفي ( 7386 ) ، خالد بن معدان الكلاعي ( 2681 ) ، بحير بن سعد السحولي ( 1828 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، حيوة بن شريح الحضرمي ( 2597 ) ، حدیث ۔۔۔ عبداللہ بن حوالہ ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” عنقریب ایسا وقت آئے گا کہ تم الگ الگ ٹکڑیوں میں بٹ جاؤ گے ، ایک ٹکڑی شام میں ، ایک یمن میں اور ایک عراق میں “ ۔ ابن حوالہ نے کہا : اللہ کے رسول ! مجھے بتائیے اگر میں وہ زمانہ پاؤں تو کس ٹکڑی میں رہوں ، آپ ﷺ نے فرمایا : ” اپنے اوپر شام کو لازم کر لو ، کیونکہ شام کا ملک اللہ کی بہترین سر زمین ہے ، اللہ اس ملک میں اپنے نیک بندوں کو جمع کرے گا ، اگر شام میں نہ رہنا چاہو تو اپنے یمن کو لازم پکڑنا اور اپنے تالابوں سے پانی پلانا ، کیونکہ اللہ نے مجھ سے شام اور اس کے باشندوں کی حفاظت کی ذمہ داری لی ہے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 344  -  3k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن عمر العدوي ( 4967 ) ، سالم بن عبد الله العدوي ( 3194 ) ، محمد بن شهاب الزهري ( 7272 ) ، محمد بن الوليد الزبيدي ( 6875 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، محمد بن المصفى القرشي ( 7277 ) ، حدیث ۔۔۔ عبداللہ بن عمر ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ جب نماز کے لیے کھڑے ہوتے تو اپنے دونوں ہاتھ اٹھاتے (رفع یدین کرتے) ، یہاں تک کہ وہ آپ کے دونوں کندھوں کے مقابل ہو جاتے ، پھر آپ ﷺ « اللہ أكبر » کہتے ، اور وہ دونوں ہاتھ اسی طرح ہوتے ، پھر رکوع کرتے ، پھر جب رکوع سے اپنی پیٹھ اٹھانے کا ارادہ کرتے تو بھی ان دونوں کو اٹھاتے (رفع یدین کرتے) یہاں تک کہ وہ آپ کے کندھوں کے بالمقابل ہو جاتے ، پھر آپ ﷺ « سمع اللہ لمن حمدہ » کہتے ، اور سجدے میں اپنے دونوں ہاتھ نہ اٹھاتے ، اور رکوع سے پہلے ہر تکبیر کے وقت دونوں ہاتھ اٹھاتے ، یہاں تک کہ آپ کی نماز پوری ہو جاتی ۔ ... حدیث متعلقہ ابواب: رکوع جانے سے پہلے اور رکوع کے بعد رفع یدین کرنا ۔ رفع یدین میں ہاتھ کندھوں تک اٹھانا ۔ ہاتھ کندھوں کے بالمقابل اٹھانا ۔ رفع الیدین قبل الرکوع و بعدہ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 340  -  3k
رواۃ الحدیث: عبد الرحمن بن سعد الساعدي ( 4374 ) ، العباس بن سهل الانصاري ( 4172 ) ، عيسى بن عبد الله العمري ( 6321 ) ، عتبة بن ابي حكيم الشعباني ( 5461 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عمرو بن عثمان القرشي ( 6163 ) ، حدیث ۔۔۔ اس طریق سے بھی ابوحمید ؓ سے یہی حدیث مروی ہے ، اس میں ہے ” جب آپ ﷺ نے سجدہ کیا تو اپنے پیٹ کو اپنی دونوں رانوں کے کسی حصہ پر اٹھائے بغیر اپنی دونوں رانوں کے درمیان کشادگی رکھی “ ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : اسے ابن مبارک نے روایت کیا ہے ، ابن مبارک سے فلیح نے بیان کیا ہے ، فلیح کہتے ہیں : میں نے عباس بن سہل کو بیان کرتے سنا تو میں اسے یاد نہیں رکھ سکا ۔ ابن مبارک کہتے ہیں : فلیح نے مجھ سے بیان کیا ، میرا خیال ہے کہ فلیح نے عیسیٰ بن عبداللہ کا ذکر کیا کہ انہوں نے اسے عباس بن سہل سے سنا ہے ، وہ کہتے ہیں : میں ابو حمید ساعدی ؓ کے پاس حاضر ہوا تو انہوں نے یہی حدیث روایت کی ۔
Terms matched: 4  -  Score: 302  -  3k
رواۃ الحدیث: النعمان بن بشير الانصاري ( 1733 ) ، ازهر بن سعيد الحرازي ( 525 ) ، صفوان بن عمرو السكسكي ( 3942 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عبد الوهاب بن نجدة الحوطي ( 5282 ) ، حدیث ۔۔۔ ازہر بن عبداللہ حرازی کا بیان ہے کہ کلاع کے کچھ لوگوں کا مال چرایا گیا تو انہوں نے کچھ کپڑا بننے والوں پر الزام لگایا اور انہیں صحابی رسول نعمان بن بشیر ؓ کے پاس لے کر آئے ، تو آپ نے انہیں چند دنوں تک قید میں رکھا پھر چھوڑ دیا ، پھر وہ سب نعمان ؓ کے پاس آئے ، اور کہا کہ آپ نے انہیں بغیر مارے اور بغیر پوچھ تاچھ کئے چھوڑ دیا ، نعمان ؓ نے کہا : تم کیا چاہتے ہو اگر تمہاری یہی خواہش ہے تو میں ان کی پٹائی کرتا ہوں ، اگر تمہارا سامان ان کے پاس نکلا تو ٹھیک ہے ورنہ اتنا ہی تمہاری پٹائی ہو گی جتنا ان کو مارا تھا ، تو انہوں نے پوچھا : یہ آپ کا فیصلہ ہے ؟ نعمان ؓ نے کہا : نہیں ، بلکہ یہ اللہ اور اس کے رسول ﷺ کا فیصلہ ہے ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : اس قول سے نعمان ؓ نے ڈرا دیا ، مطلب یہ ہے کہ مارنا پیٹنا اعتراف کے بعد ہی واجب ہوتا ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 302  -  4k
رواۃ الحدیث: عائشة بنت ابي بكر الصديق ( 4049 ) ، عبد الله بن عفيف النصري ( 4650 ) ، محمد بن زياد الالهاني ( 6973 ) ، محمد بن حرب الخولاني ( 6916 ) ، كثير بن عبيد المذحجي ( 6567 ) ، موسى بن مروان التمار ( 7769 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عبد الوهاب بن نجدة الحوطي ( 5282 ) ، حدیث ۔۔۔ ام المؤمنین عائشہ ؓ کہتی ہیں کہ میں نے عرض کیا : اللہ کے رسول ! مومنوں کے بچوں کا کیا حال ہو گا ؟ آپ ﷺ نے فرمایا : ” وہ اپنے ماں باپ کے حکم میں ہوں گے “ میں نے عرض کیا : اللہ کے رسول ! بغیر کسی عمل کے ؟ آپ ﷺ نے فرمایا : ” اللہ زیادہ بہتر جانتا ہے کہ وہ کیا عمل کرتے “ میں نے عرض کیا : اللہ کے رسول ! اور مشرکین کے بچے ؟ آپ ﷺ نے فرمایا : ” اپنے ماں باپ کے حکم میں ہوں گے “ میں نے عرض یا بغیر کسی عمل کے ؟ آپ ﷺ نے فرمایا : ” اللہ بہتر جانتا ہے کہ وہ کیا عمل کرتے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  3k
رواۃ الحدیث: نعيم بن ربيعة الازدي  ( 7916 ) ، مسلم بن يسار الجهني ( 7491 ) ، عبد الحميد بن عبد الرحمن العدوي ( 4241 ) ، زيد بن ابي انيسة الجزري ( 3115 ) ، عمر بن جعثم القرشي ( 5927 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، محمد بن المصفى القرشي ( 7277 ) ، حدیث ۔۔۔ نعیم بن ربیعہ کہتے ہیں کہ میں عمر بن خطاب ؓ کے پاس تھا ، پھر انہوں نے یہی حدیث روایت کی ، مالک کی روایت زیادہ کامل ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
رواۃ الحدیث: عمرو بن عثمان القرشي ( 6163 ) ، محمد بن يحيى الذهلي ( 7323 ) ، معاوية بن ابي سفيان الاموي ( 7570 ) ، عبد الله بن لحي الهوزني ( 5032 ) ، ازهر بن سعيد الحرازي ( 525 ) ، صفوان بن عمرو السكسكي ( 3942 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، عمرو بن عثمان القرشي ( 6163 ) ، صفوان بن عمرو السكسكي ( 3942 ) ، عبد القدوس بن الحجاج الخولاني ( 4602 ) ، محمد بن يحيى الذهلي ( 7323 ) ، احمد بن حنبل الشيباني ( 488 ) ، حدیث ۔۔۔ ابوعامر عبداللہ بن لحی حمصی ہوزنی کہتے ہیں کہ معاویہ ؓ نے ہمارے درمیان کھڑے ہو کر کہا : سنو ! رسول اللہ ﷺ ہمارے درمیان کھڑے ہوئے اور فرمایا : ” سنو ! تم سے پہلے جو اہل کتاب تھے ، بہتر (۷۲) فرقوں میں بٹ گئے ، اور یہ امت تہتر (۷۳) فرقوں میں بٹ جائے گی ، بہتر فرقے جہنم میں ہوں گے اور ایک جنت میں اور یہی « الجماعۃ » ہے “ ۔ ابن یحییٰ اور عمرو نے اپنی روایت میں اتنا مزید بیان کیا : ” اور عنقریب میری امت میں ایسے لوگ نکلیں گے جن میں گمراہیاں اسی طرح سمائی ہوں گی ، جس طرح کتے کا اثر اس شخص پر چھا جاتا ہے جسے اس نے کاٹ لیا ہو “ ۔ اور عمرو کی روایت میں « لصاحبہ » کے بجائے « بصاحبہ » ہے اس میں یہ بھی ہے : کوئی رگ اور کوئی جوڑ ایسا باقی نہیں رہتا جس میں اس کا اثر داخل نہ ہوا ہو ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  4k
رواۃ الحدیث: معاذ بن جبل الانصاري ( 7547 ) ، عبد الرحمن بن عائذ الازدي ( 4402 ) ، سعد بن عبد الله الاغطش ( 3254 ) ، بقية بن الوليد الكلاعي ( 1919 ) ، هشام بن عبد الملك اليزني ( 8054 ) ، حدیث ۔۔۔ معاذ بن جبل ؓ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ ﷺ سے پوچھا : مرد کے لیے اس کی حائضہ بیوی کی کیا چیز حلال ہے ؟ تو آپ ﷺ نے فرمایا : ” لنگی (تہبند) کے اوپر کا حصہ جائز ہے ، لیکن اس سے بھی بچنا افضل ہے “ ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : یہ حدیث قوی نہیں ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
Result Pages: 1 2 Next >>


Search took 0.558 seconds