رواة الحدیث

نتائج
نتیجہ مطلوبہ تلاش لفظ / الفاظ: بكر سوادة الجذامي 1931
کتاب/کتب میں: سنن ابي داود
7 رزلٹ جن میں تمام الفاظ آئے ہیں۔
رواۃ الحدیث: سهل بن سعد الساعدي ( 3672 ) ، وفاء بن شريح الصدفي ( 8156 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، عبد الله بن لهيعة الحضرمي ( 5033 ) ، عمرو بن الحارث الانصاري ( 6080 ) ، عبد الله بن وهب القرشي ( 5147 ) ، احمد بن صالح المصري ( 452 ) ، حدیث ۔۔۔ سہل بن سعد ساعدی ؓ کہتے ہیں کہ ایک دن رسول اللہ ﷺ ہمارے پاس تشریف لائے ، ہم قرآن کی تلاوت کر رہے تھے تو آپ ﷺ نے فرمایا : ” الحمداللہ ! اللہ کی کتاب ایک ہے اور تم لوگوں میں اس کی تلاوت کرنے والے سرخ ، سفید ، سیاہ سب طرح کے لوگ ہیں ، تم اسے پڑھو قبل اس کے کہ ایسے لوگ آ کر اسے پڑھیں ، جو اسے اسی طرح درست کریں گے ، جس طرح تیر کو درست کیا جاتا ہے ، اس کا بدلہ (ثواب) دنیا ہی میں لے لیا جائے گا اور اسے آخرت کے لیے نہیں رکھا جائے گا “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  3k
رواۃ الحدیث: ابن الفراسي ( 1100 ) ، مسلم بن مخشي المدلجي ( 7483 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، جعفر بن ربيعة القرشي ( 2148 ) ، الليث بن سعد الفهمي ( 6641 ) ، قتيبة بن سعيد الثقفي ( 6460 ) ، حدیث ۔۔۔ ابن الفراسی سے روایت ہے کہ فراسی نے رسول اللہ ﷺ سے پوچھا ! اللہ کے رسول ! کیا میں سوال کروں ؟ تو آپ ﷺ نے فرمایا : ” نہیں اور اگر سوال کرنا ضروری ہی ہو تو نیک لوگوں سے سوال کرو “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
رواۃ الحدیث: عطاء بن يسار الهلالي ( 5640 ) ، ابو عبيد الله المصري ( 256 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، عبد الله بن لهيعة الحضرمي ( 5033 ) ، عبد الله بن مسلمة الحارثي ( 5085 ) ، حدیث ۔۔۔ عطاء بن یسار سے روایت ہے کہ دو صحابی رسول ﷺ (سفر میں تھے) ، پھر انہوں نے اسی مفہوم کی حدیث ذکر کی ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
رواۃ الحدیث: السائب بن خلاد الانصاري ( 1446 ) ، صالح بن خيوان السباي ( 3868 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، عمرو بن الحارث الانصاري ( 6080 ) ، عبد الله بن وهب القرشي ( 5147 ) ، احمد بن صالح المصري ( 452 ) ، حدیث ۔۔۔ ابو سہلہ سائب بن خلاد ؓ کہتے ہیں (احمد کہتے ہیں کہ وہ نبی اکرم ﷺ کے اصحاب میں سے ہیں) کہ ایک شخص نے کچھ لوگوں کی امامت کی تو قبلہ کی جانب تھوک دیا اور رسول اللہ ﷺ یہ دیکھ رہے تھے ، جب وہ شخص نماز سے فارغ ہوا تو آپ ﷺ نے فرمایا : ” یہ شخص اب تمہاری امامت نہ کرے “ ، اس کے بعد اس نے نماز پڑھانی چاہی تو لوگوں نے اسے امامت سے روک دیا اور کہا کہ رسول اللہ ﷺ نے ایسا فرمایا ہے ، اس نے رسول اللہ ﷺ سے اس کا ذکر کیا ، آپ ﷺ نے فرمایا : ” ہاں ، (میں نے منع کیا ہے) “ ، صحابی کہتے ہیں : میرا خیال ہے کہ آپ ﷺ نے یہ بھی فرمایا : ” تم نے اللہ اور اس کے رسول کو تکلیف پہنچائی ہے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  3k
رواۃ الحدیث: ابو سعيد الخدري ( 3260 ) ، عطاء بن يسار الهلالي ( 5640 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، الليث بن سعد الفهمي ( 6641 ) ، عبد الله بن نافع المخزومي ( 5123 ) ، محمد بن إسحاق المسيبي ( 6809 ) ، حدیث ۔۔۔ ابو سعید خدری ؓ کہتے ہیں کہ دو شخص ایک سفر میں نکلے تو نماز کا وقت آ گیا اور ان کے پاس پانی نہیں تھا ، چنانچہ انہوں نے پاک مٹی سے تیمم کیا اور نماز پڑھی ، پھر وقت کے اندر ہی انہیں پانی مل گیا تو ان میں سے ایک نے نماز اور وضو دونوں کو دوہرایا ، اور دوسرے نے نہیں دوہرایا ، پھر دونوں رسول اللہ ﷺ کے پاس آئے تو ان دونوں نے آپ سے اس کا ذکر کیا ، تو آپ ﷺ نے اس شخص سے فرمایا جس نے نماز نہیں لوٹائی تھی : ” تم نے سنت کو پا لیا اور تمہاری نماز تمہیں کافی ہو گئی “ ، اور جس شخص نے وضو کر کے دوبارہ نماز پڑھی تھی اس سے فرمایا : ” تمہارے لیے دوگنا ثواب ہے “ ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : ابن نافع کے علاوہ دوسرے لوگ اس حدیث کو لیث سے ، وہ عمیر بن ابی ناجیہ سے ، وہ بکر بن سوادہ سے ، وہ عطاء بن یسار سے ، وہ نبی اکرم ﷺ سے (مرسلاً) روایت کرتے ہیں ۔ ابوداؤد کہتے ہیں : اس حدیث میں ابو سعید خدری ؓ کا ذکر محفوظ نہیں ہے ، یہ مرسل ہے ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  4k
رواۃ الحدیث: ابو سعيد الخدري ( 3260 ) ، ابو النجيب العامري ( 4039 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، عمرو بن الحارث الانصاري ( 6080 ) ، عبد الله بن وهب القرشي ( 5147 ) ، احمد بن صالح المصري ( 452 ) ، حدیث ۔۔۔ ابو سعید خدری ؓ کا بیان ہے کہ رسول اللہ ﷺ کے پاس لہسن اور پیاز کا ذکر کیا گیا اور عرض کیا گیا : اللہ کے رسول ! ان میں سب سے زیادہ سخت لہسن ہے کیا آپ اسے حرام کرتے ہیں ؟ تو نبی اکرم ﷺ نے فرمایا : ” اسے کھاؤ اور جو شخص اسے کھائے وہ اس مسجد (مسجد نبوی) میں اس وقت تک نہ آئے جب تک اس کی بو نہ جاتی رہے “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 292  -  2k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن عمرو السهمي ( 4980 ) ، بكر بن سوادة الجذامي ( 1931 ) ، عبد الرحمن بن رافع التنوخي ( 4359 ) ، عبد الرحمن بن زياد الإفريقي ( 4364 ) ، زهير بن معاوية الجعفي ( 3044 ) ، احمد بن يونس التميمي ( 465 ) ، حدیث ۔۔۔ عبداللہ بن عمرو ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” جب امام نماز پوری کر لے اور آخری قعدہ میں بیٹھ جائے ، پھر بات کرنے (یعنی سلام پھیرنے) سے پہلے اس کا وضو ٹوٹ جائے تو اس کی اور اس کے پیچھے جنہوں نے نماز مکمل کی ، سب کی نماز پوری ہو گئی “ ۔
Terms matched: 4  -  Score: 288  -  2k


Search took 0.511 seconds