رواة الحدیث

نتائج
نتیجہ مطلوبہ تلاش لفظ / الفاظ: بكر عبد الله المزني 1933
کتاب/کتب میں: صحیح مسلم
11 رزلٹ جن میں تمام الفاظ آئے ہیں۔
رواۃ الحدیث: عروة بن المغيرة الثقفي ( 5595 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، المغيرة بن شعبة الثقفي ( 1665 ) ، عروة بن المغيرة الثقفي ( 5595 ) ، الحسن البصري ( 1239 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، سليمان بن طرخان التيمي ( 3601 ) ، يحيى بن سعيد القطان ( 8271 ) ، محمد بن حاتم السمين ( 6912 ) ، محمد بن بشار العبدي ( 6879 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا مغیرہ ؓ سے روایت ہے ، رسول اللہ ﷺ نے وضو کیا تو مسح کیا پیشانی پر اور عمامہ پر اور موزوں پر ۔
Terms matched: 5  -  Score: 1083  -  2k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن عمر العدوي ( 4967 ) ، انس بن مالك الانصاري ( 720 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، حميد بن ابي حميد الطويل ( 2531 ) ، هشيم بن بشير السلمي ( 8062 ) ، سريح بن يونس المروروذي ( 3220 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا انس ؓ نے کہا : سنا میں نے رسول اللہ ﷺ کو لبیک پکارتے تھے حج اور عمرہ دونوں کی ۔ بکر نے کہا کہ میں نے یہی حدیث سیدنا ابن عمر ؓ سے بیان کی تو انہوں نے کہا : فقط حج کی لبیک پکاری ۔ سو میں سیدنا انس ؓ سے ملا اور ان سے کہا کہ سیدنا ابن عمر ؓ تو یوں کہتے ہیں ۔ سیدنا انس ؓ نے کہا کہ تم لوگ ہم کو بچہ جانتے ہو ۔ میں نے بخوبی سنا ہے کہ رسول اللہ ﷺ فرماتے تھے : ” لبیک ہے عمرہ کی اور حج کی ۔ “
Terms matched: 5  -  Score: 812  -  3k
رواۃ الحدیث: الحارث بن ربعي السلمي ( 1190 ) ، عبد الله بن رباح الانصاري ( 4802 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، حميد بن ابي حميد الطويل ( 2531 ) ، حماد بن سلمة البصري ( 2492 ) ، سليمان بن حرب الواشحي ( 3579 ) ، إسحاق بن راهويه المروزي ( 927 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا ابوقتادہ ؓ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ جب سفر میں رات کے وقت پڑاؤ ڈالتے تو آپ ﷺ اپنی دائیں کروٹ لیٹتے اور اگر صبح سے پہلے پڑاؤ ڈالتے تو اپنے بازو کھڑے کرتے اور ہتھیلی پر چہرہ رکھتے ۔
Terms matched: 5  -  Score: 812  -  2k
رواۃ الحدیث: ابو هريرة الدوسي ( 4396 ) ، نفيع بن رافع المدني ( 7930 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، سليمان بن طرخان التيمي ( 3601 ) ، معتمر بن سليمان التيمي ( 7607 ) ، محمد بن عبد الاعلى القيسي ( 7050 ) ، عبيد الله بن معاذ العنبري ( 5435 ) ، حدیث ۔۔۔ ابورافع سے روایت ہے کہ میں سیدنا ابوہریرہ ؓ کے ساتھ عشاء کی نماز پڑھی اور اس میں سجدہ کیا (نماز کے بعد) میں نے کہا : یہ سجدہ تم نے کیسا کیا ؟ انہوں نے کہا کہ میں نے تو یہ سجدہ رسول اللہ ﷺ کے پیچھے کیا اور میں اس کو کرتا رہوں گا یہاں تک کہ آپ ﷺ سے ملوں ، ابن عبدالاعلیٰ کی روایت میں یوں ہے کہ میں یہ سجدہ ہمیشہ کرتا رہوں گا ۔
Terms matched: 5  -  Score: 812  -  2k
رواۃ الحدیث: عبد الله بن العباس القرشي ( 4883 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، حميد بن ابي حميد الطويل ( 2531 ) ، يزيد بن زريع العيشي ( 8418 ) ، محمد بن المنهال الضرير ( 6865 ) ، حدیث ۔۔۔ عبداللہ مزنی فرزند بکر نے کہا کہ میں سیدنا ابن عباس ؓ کے پاس بیٹھا ہوا تھا کعبہ کے نزدیک کہ ایک گاؤں کا آدمی آیا اور اس نے کہا : کیا سبب ہے کہ میں تمہارے چچا کی اولاد کو دیکھتا ہوں کہ وہ شہد کا شربت اور دودھ پلاتے ہیں اور تم کھجور کا شربت پلاتے ہو کیا تم نے محتاجی کے سبب سے اسے اختیار کیا ہے یا بخیلی کی وجہ سے ؟ تو سیدنا ابن عباس ؓ نے فرمایا : الحمداللہ نہ ہم کو محتاجی ہے نہ بخیلی ۔ اصل وجہ اس کی یہ ہے کہ نبی ﷺ تشریف لائے اپنی اونٹنی پر اور ان کے پیچھے اسامہ ؓ تھے اور آپ ﷺ نے پانی مانگا سو ہم ایک پیالہ کھجور کے شربت کا لائے اور آپ ﷺ نے پیا اور اس میں سے جو بچا وہ اسامہ ؓ کو پلایا اور آپ ﷺ نے فرمایا : ” تم نے خوب اچھا کام کیا اور ایسا ہی کیا کرو ۔ “ سو ہم اس کو بدلنا نہیں چاہتے جس کا حکم رسول اللہ ﷺ دے چکے ہیں ۔
Terms matched: 5  -  Score: 800  -  4k
رواۃ الحدیث: المغيرة بن شعبة الثقفي ( 1665 ) ، عروة بن المغيرة الثقفي ( 5595 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، سليمان بن طرخان التيمي ( 3601 ) ، معتمر بن سليمان التيمي ( 7607 ) ، محمد بن عبد الاعلى القيسي ( 7050 ) ، امية بن بسطام العيشي ( 699 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا مغیرہ ؓ سے روایت ہے ، رسول اللہ ﷺ نے مسح کیا موزوں پر اور پیشانی پر اور عمامہ پر ۔
Terms matched: 5  -  Score: 722  -  2k
رواۃ الحدیث: المغيرة بن شعبة الثقفي ( 1665 ) ، عروة بن المغيرة الثقفي ( 5595 ) ، الحسن البصري ( 1239 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، سليمان بن طرخان التيمي ( 3601 ) ، معتمر بن سليمان التيمي ( 7607 ) ، محمد بن عبد الاعلى القيسي ( 7050 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا مغیرہ ؓ نبی اکرم ﷺ سے مذکورہ حدیث کی طرح روایت کرتے ہیں ۔
Terms matched: 5  -  Score: 722  -  2k
رواۃ الحدیث: انس بن مالك الانصاري ( 720 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، حبيب بن الشهيد الازدي ( 2257 ) ، يزيد بن زريع العيشي ( 8418 ) ، امية بن بسطام العيشي ( 699 ) ، حدیث ۔۔۔ مضمون وہی ہے صرف الفاظ میں یہ فرق ہے کہ سیدنا انس ؓ نے فرمایا گویا ہم بچے تھے (یعنی سمجھے نہیں) ۔
Terms matched: 5  -  Score: 632  -  1k
رواۃ الحدیث: المغيرة بن شعبة الثقفي ( 1665 ) ، عروة بن المغيرة الثقفي ( 5595 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، حميد بن ابي حميد الطويل ( 2531 ) ، يزيد بن زريع العيشي ( 8418 ) ، محمد بن بزيع البصري ( 7105 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا مغیرہ بن شعبہ ؓ سے روایت ہے ، رسول اللہ ﷺ سفر میں پیچھے رہ گئے ، میں بھی آپ ﷺ کے ساتھ پیچھے رہ گیا ۔ جب آپ ﷺ حاجت سے فارغ ہوئے تو فرمایا : ”تمہارے پاس پانی ہے ؟ “ میں ایک چھاگل لے کر آیا پانی کی ، آپ ﷺ نے دونوں ہاتھ دھوئے اور منہ دھویا پھر باہیں آستینوں سے نکالنا چاہیں تو آستین تنگ ہوئی ۔ آپ ﷺ نے نیچے سے ہاتھ کو نکالا اور جبہ کو اپنے مونڈھوں پر ڈال دیا اور دونوں ہاتھ دھوئے اور پیشانی پر مسح کیا اور عمامہ پر اور موزوں پر پھر سوار ہوئے میں بھی سوار ہوا ۔ جب اپنے لوگوں میں پہنچے تو وہ نماز پڑھ رہے تھے سیدنا عبدالرحمٰن بن عوف ؓ ان کو نماز پڑھا رہے تھے اور وہ ایک رکعت پڑھ چکے تھے ۔ ان کو جب معلوم ہوا کہ رسول اللہ ﷺ تشریف لائے ہیں وہ پیچھے ہٹنے لگے ۔ آپ ﷺ نے اشارہ کیا اپنی جگہ پر رہو ۔ آخر انہوں نے نماز پڑھائی جب سلام پھیرا تو رسول اللہ ﷺ کھڑے ہوئے اور میں بھی کھڑا ہوا اور ایک رکعت جو ہم سے پہلے ہو چکی تھی پڑھ لی ۔
Terms matched: 5  -  Score: 632  -  4k
رواۃ الحدیث: انس بن مالك الانصاري ( 720 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، غالب بن ابي غيلان الراسبي ( 6350 ) ، بشر بن المفضل الرقاشي ( 1868 ) ، يحيى بن يحيى النيسابوري ( 8350 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا انس ؓ نے کہا : ہم رسول اللہ ﷺ کے ساتھ گرمی کی شدت میں نماز پڑھتے تھے ، پھر جب کسی سے پیشانی سجدہ میں زمین پر نہ رکھی جاتی تھی تو اپنا کپڑا بچھا کر اس کے اوپر سجدہ کرتا تھا ۔
Terms matched: 5  -  Score: 632  -  2k
رواۃ الحدیث: ابو هريرة الدوسي ( 4396 ) ، نفيع بن رافع المدني ( 7930 ) ، بكر بن عبد الله المزني ( 1933 ) ، حميد بن ابي حميد الطويل ( 2531 ) ، إسماعيل بن علية الاسدي ( 1003 ) ، ابن ابي شيبة العبسي ( 5049 ) ، حميد بن ابي حميد الطويل ( 2531 ) ، يحيى بن سعيد القطان ( 8271 ) ، زهير بن حرب الحرشي ( 3036 ) ، حدیث ۔۔۔ سیدنا ابوہریرہ ؓ سے روایت ہے کہ وہ رسول اللہ ﷺ کو ملے مدنیہ کی ایک راہ میں اور جنبی تھے کھسک گئے اور غسل کرنے کو چلے گئے ۔ رسول اللہ ﷺ نے ان کو ڈھونڈا جب وہ آئے تو پوچھا : ” کہاں تھے ؟ “ انہوں نے کہا : یا رسول اللہ ! جس وقت آپ مجھ سے ملے میں جنبی تھا ، میں نے برا جانا ، آپ کے پاس بیٹھنا جب تک غسل نہ کر لوں ۔ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” سبحان اللہ ! مؤمن کہیں نجس ہوتا ہے ۔ “
Terms matched: 5  -  Score: 632  -  3k


Search took 0.614 seconds