صحيح البخاري کل احادیث 7563 :حدیث نمبر
صحيح البخاري
کتاب: فضیلتوں کے بیان میں
The Book of Virtues
23. بَابُ صِفَةِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:
23. باب: نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے حلیہ اور اخلاق فاضلہ کا بیان۔
(23) Chapter. The description of the Prophet (p.b.u.h).
حدیث نمبر: 3549
پی ڈی ایف بنائیں مکررات اعراب English
حدثنا احمد بن سعيد ابو عبد الله، حدثنا إسحاق بن منصور، حدثنا إبراهيم بن يوسف، عن ابيه، عن ابي إسحاق، قال: سمعت البراء، يقول: كان رسول الله صلى الله عليه وسلم" احسن الناس وجها واحسنه خلقا ليس بالطويل البائن ولا بالقصير".حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ سَعِيدٍ أَبُو عَبْدِ اللَّهِ، حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ مَنْصُورٍ، حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ يُوسُفَ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ، قَالَ: سَمِعْتُ الْبَرَاءَ، يَقُولُ: كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ" أَحْسَنَ النَّاسِ وَجْهًا وَأَحْسَنَهُ خَلْقًا لَيْسَ بِالطَّوِيلِ الْبَائِنِ وَلَا بِالْقَصِيرِ".
ہم سے ابوعبداللہ احمد بن سعید نے بیان کیا، کہا ہم سے اسحٰق بن منصور نے بیان کیا، کہا ہم سے ابراہیم بن یوسف نے بیان کیا، ان سے ان کے والد نے، ان سے ابواسحٰق نے بیان کیا کہ میں نے براء بن عازب رضی اللہ عنہما سے سنا، آپ نے بیان کیا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم حسن و جمال میں بھی سب سے بڑھ کر تھے اور جسمانی ساخت میں بھی سب سے بہتر تھے۔ آپ کا قد نہ بہت لانبا تھا اور نہ چھوٹا (بلکہ درمیانہ قد تھا)۔

Narrated Al-Bara: Allah's Apostle was the handsomest of all the people, and had the best appearance. He was neither very tall nor short.
USC-MSA web (English) Reference: Volume 4, Book 56, Number 749

   صحيح البخاري3549براء بن عازبأحسن الناس وجها أحسنه خلقا ليس بالطويل البائن ولا بالقصير
   صحيح مسلم6066براء بن عازبأحسن الناس وجها أحسنه خلقا ليس بالطويل الذاهب ولا بالقصير

تخریج الحدیث کے تحت حدیث کے فوائد و مسائل
  الشيخ حافط عبدالستار الحماد حفظ الله، فوائد و مسائل، تحت الحديث صحيح بخاري:3549  
3549. حضرت ابو اسحاق سبیعی بیان کرتے ہیں کہ میں نے حضرت براء رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے سنا، وہ فرما رہے تھے کہ رسول اللہ ﷺ سب لوگوں سے زیادہ خوب رو اور جسمانی اعتبار سے نہایت متناسب الاعضاء تھے۔ آپ نہ تو بہت دراز قامت اور نہ پست قد ہی تھے۔ [صحيح بخاري، حديث نمبر:3549]
حدیث حاشیہ:

اس حدیث میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے حسن وجمال کی ایک جھلک بیان ہوئی ہے کہ آپ خوبصورت اور خوب سیرت تھے۔
حضرت جابر بن سمرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ بیان کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کوسرخ جوڑا پہنے رات کی چاندنی میں دیکھ رہا تھا۔
کبھی چاند کو دیکھتا اور کبھی آپ کے رخ انور پر نظر کرتا۔
بالآخر اس فیصلے پر پہنچا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم چاند سے کہیں زیادہ حسین ہیں۔
(المستدرك للحاکم: 186/4)
حضرت جابر رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے کسی نے دریافت کیا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا چہرہ مبارک تلوار کی طرح چمک دار اورلمبا تھا؟ انھوں نے فرمایا:
نہیں بلکہ سورج اور چاند کی طرح روشن اور گول تھا۔
(مسند أحمد: 104/5)
حضرت ام معبد رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے آپ کے حسن وجمال کا نقشہ،ان الفاظ میں کھینچا ہے:
میں نے ایک ایساآدمی دیکھا جو رنگت کی چمک ودمک اورچہرے کی تابانی لیے ہوئے تھا۔
دورسے دیکھنے میں سب سے خوبصورت اور وجیہ اورقریب سے دیکھنے سے انتہائی جاذب نظر اور پُرجمال۔

حضرت ابوطفیل رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا بیان ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم گورے رنگ،پُرملامت چہرے،موزوں ڈیل ڈول اور میانہ قد وقامت کے حامل تھے(صحیح مسلم، الفضائل، حدیث: 6071(2340)
حضرت کعب بن مالک رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتےہیں:
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم جب خوش ہوتے تو آپ کا رخ زیبا(چہرہ مبارک)
ایسے دمک اُٹھتا گویا چاند کا ایک ٹکڑا ہے۔
(صحیح البخاري، المناقب، حدیث: 3556)
   هداية القاري شرح صحيح بخاري، اردو، حدیث\صفحہ نمبر: 3549   


http://islamicurdubooks.com/ 2005-2023 islamicurdubooks@gmail.com No Copyright Notice.
Please feel free to download and use them as you would like.
Acknowledgement / a link to www.islamicurdubooks.com will be appreciated.